Academics

Engage. Inspire. Connect.

Curriculum

JBH has its own approach to the curriculum focused at achieving its aims and objectives. JBH courses are a perfect blend of both academic rigor and diversity. The curriculum is an embodiment of a fine balance between its four constituent parts of academic rigor, diversity and depth. Throughout, the curriculum fosters objective, analytical and research mindset in the student. Arabic language, its syntax and principles, literature and literary criticism are taught in depth. JBH curriculum develops deep insights in Arabic language, Quran, Hadith, Seerah, fiqh and aqeedah and lays the foundation for in independent inquiry and ijtihad in Islamic sciences.

نصاب تعلیم

اہداف کی مناسبت سے جامعۃ البنات کا ایک منفرد نصاب تعلیم ہےجو علوم اسلامی میں تفقہ ، تنوع، گہرائی و گیرائی اورتحقیقی مزاج و منہج کے درمیان توازن اور ۱عتدال کی بہترین مثال ہے۔ عربی زبان و ادب ، انشا ، قواعد نحو و صرف میں مہارت کے ساتھ ساتھ، تقابلی مطالعہ اور جدیدتجزیاتی و ترکیبی علوم و تدابیرسے طالبات کو روشناس کرایا جاتا ہے اور مشق کرائی جاتی ہے تاکہ طالبات کسی مسئلہ کے متعلق آزادانہ طور پر تحقیق و استنباط کرسکیں اور مجتہدانہ رائے قائم کرسکیں۔

Along with education, the Jamia curriculum puts equal emphasis on moral training and rectitude. Academic studies are tied with personal practice; students are trained in a discipline regime so that they internalize and make it a part of their personality and character. Qualities of self-introspection, purification, peity, meditation, Godliness and God-consciousness are fostered and promoted in the student. Fostered and measured, personality development, leadership qualities and moral rectitude are quintessential to the Jamia curriculum. Jamia exams not only test academics but also assess and measure individual practice, sincerity and personal adherence to the teachings of Islam.

تعلیم کے ساتھ ساتھ تربیت بھی جامعہ کے اہم ترین اہداف میں سے ہے۔ جامعہ کے نصاب نے کسب علم کونہ صرف عمل صالح کے ساتھ مشروط کیا ہے بلکہ طالبات کوعملی مشق کرائی جاتی ہے اور اسے مزاج کا حصہ بنا دیا جاتا ہے۔ شخصی احتساب، تزکیہ و طہارت، زہد و تقوی، ذکر و اذکار، عبادتوں میں خشوع و خضوع ،للہیت اور فنا فی اللہیت کا ذوق پیدا کیا جاتا ہے۔ شخصیت کا ارتقا ، قائدانہ صلاحیتوں کا نشو و نما اور لوازم تعمیر سیرت و کردار کی افزائش و پیمائش جامعۃ کے نصاب تعلیم کا اٹوٹ حصہ ہے ۔ جامعۃ کےامتحانات میں علمی لیاقت و قابلیت کے ساتھ ساتھ طالبات میں صالحیت کو بھی جانچا جاتا ہے اورامتحانات میں کامیابی کیلئے ضروری ہے کہ وہ متعینہ معیارپر پوری اتریں ۔

And the last of its aims integrated with the JBH curriculum is to produce zealous women activists and future women leaders for the renaissance of the Muslim Ummah and reconstruction of Muslim society on Islamic principles. Mother’s lap is the first school and training ground for the children of the Ummah. This is the most important and biggest responsibility of a Muslim mother to train and rollout future leaders for humanity; brighten families and lives with happiness and peace and sow the seeds of Islamic activism in the bosoms of Muslim women. Guide the women folk and represent their issues and aspirations; serve humanity and work for the nation building.

جامعہ کا آخری ہدف جسے اس کے نصاب تعلیم سےجوڑا گیاہے وہ ملت اسلامیہ کی نشات ثانیۃ اور اسلامی اصول پر مسلم سماج کی تعمیر نو کیلئے مسلم خواتین میں فعال کارکن اور قیادت فراہم کرنا ہے۔ امت کے بیٹوں کی پہلی درسگاہ ماں کی گود ہے۔ اس کی یہ سب سےبڑی اور اہم ذمہ داری ہے کہ وہ امت کے سپوتو ں کی اسلامی اصول پر تعلیم و تربیت کرے اور اس کے روشن مستقبل کیلئے تربیت یافتہ قیادت فراہم کرے۔ گھروں اور خاندانوں کو خوشی اور امن کا گہوارہ بنائے اور خواتین کے دلوں میں تحریک اسلامی کے بیج بوئے۔ خواتین کی رہنمائی کرے اور سماج میں ان کے مسائل اور عزائم کی نمائندگی کرے۔ انسانیت کی خدمت اور ملک کی تعمیر میں اپنا حصہ ادا کرے۔

JBH curriculum is designed and developed in such a way that it fulfills all the above educational, training, reformative, Dawah and propagation goals and stand true to

اور لیتفقھو فی الدین و لینذرو ۔۔۔۔۔۔۔

جامعہ کا نصاب تعلیم اس طرح تشکیل دیا گیا ہے کہ وہ مندرجہ بالا تمام تعلیمی ، تربیتی، اصلاحی، دعوتی اورتبلیغی اہداف کو بہ حسن و خوبی حاصل کرسکے اور لیتفقھو فی الدین و لینذرو ۔۔۔۔۔۔۔ کے مقاصد کو حاصل کرسکے۔